The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صوبائی سیکرٹری سیاسیات اور مذاکراتی کمیٹی کے رکن اسد عباس نقوی سمیت ایم ڈبلیو ایم کے40 کارکنوں کو اسلام آباد کے سیکٹر جی سکس فور سے گرفتار کرلیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق حکومت کے ساتھ مذاکرات کرنے والی کمیٹی کے رکن و ایم ڈبلیو ایم پنجاب کے سیکرٹری سیاسیات اسد عباس نقوی سمیت 40 افراد کو مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی دفتر پر چھاپا مار کر گرفتار کرلیا گیا ہے۔اسد عباس نقوی کے علاوہ ایم ڈبلیوایم آزاد کشمیر کے صوبائی سیکریٹری سیاسیات تصور موسوی، سیکریٹری روابط مولانا حمید نقوی ، سیکریٹری اطلاعات زیشان حیدر سمیت دیگر شامل ہیں ،  اسلام آباد پولیس، پنجاب پولیس اور رینجر زکی مشترکہ کارروائی میں یہ گرفتاریاں عمل میں لائی گئی ہیں۔تمام گرفتار شدگان کو پولیس اور رینجرز کے اہلکار نامعلوم مقام پر لے گئے ہیں ،  مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ ناصرعباس جعفری، مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ امین شہیدی اور مرکزی سیکرٹری سیاسیات ناصر عباس شیرازی کی جانب سے ان گرفتاریوں کی شدید مذمت کی گئی ہے اور مطالبہ کیا گیا ہے کہ حکومت فی الفور کارکنوں کو رہا کرے۔

وحدت نیوز (کوہاٹ) مجلس وحدت مسلمین ضلع کوہاٹ کے سیکرٹری جنرل حاجی علی دادخان کے والد گرامی حاجی اول خان انتقال کر گئے ہیں، ان کی نماز جنازہ کوہاٹ کے علاقہ مرئی بالا میں ادا کی گئی، جس میں بڑی تعداد میں علماء کرام، عمائدین اور عوام نے شرکت کی۔ نماز جنازہ میں مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ سید محمد سبطین حسینی، سابق صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ سبیل حسن مظاہری، صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ ارشاد علی، علامہ سید عبد الحسین بھی شریک ہوئے، علامہ سید سبطین الحسینی اور دیگر نے حاجی علی داد خان کو تعزیت پیش کی۔ اور دعا کی خدا مرحوم کو جنت الفردوس میں جگہ اور پسماندگان کو صبر جمیل عنایت فرمائے، علاوہ ازیں صوبائی آفس مسئول ارشاد حسین بنگش اور صوبائی سیکرٹری اطلاعات سید عدیل عباس زیدی نے بھی حاجی اول خان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کیا۔

وحدت نیوز(کراچی) آج بانیٔ پاکستان و بابائے قوم اور ملت جعفریہ کے ایک روشن ستارے قائد اعظم محمد علی جناح کی 66 ویں برسی عقیدت و احترام سے منائی جا رہی ہے۔ سلسلے میں سیاسی و عسکری شخصیات کے علاوہ مختلف شعبۂ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی جانب سے مزار قائد پر حاضری اور فاتحہ خوانی کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

 

قائد اعظم محمد علی جناح 25 دسمبر 1876 کو پیدا ہوئے، انہوں نے ابتدائی تعلیم کا آغاز 1882 میں کیا، وہ 1893 میں اعلیٰ تعلیم کے حصول کیلئے انگلستان روانہ ہو گئے، وہاں سے انہوں نے 1896 میں بیرسٹری کا امتحان پاس کیا اور وطن واپس آ گئے۔ قائدِاعظم کی شخصیّت ایک اعلیٰ اور مثالی کِردار کی حامل تھی، انہوں نے مذہب کے جمہوری اور انصاف پر مبنی اُصولوں کو اپنا کر عزت حاصل کی۔

 

قائد اعظم نے وکالت اور سیاست میں رہ کر اپنے دامن کو صاف ستھرا رکھا، اس طرح آپ مسلمانوں کی ذِہنی تعمیرِنو میں روشنی کا مینار بنے رہے۔ آپ نے اپنی سیاسی زندگی کا آغاز اعلیٰ معیار اور دیانت سے کِیا اور اپنے لیے ایک ایسا لائحۂ عمل وضع کِیا جو ہمیشہ جامع اور مکمل رہا۔
قائد اعظم محمد علی جناح کا انتقال 11 ستمبر 1948 میں ہوا۔ اپکی نمازہ جنازہ میں ہر آنکھ اشکبار تھی جبکہ آپکے جنازے میں علم غازی عباس بھی لہرایا گیا۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مرکزی سیکرٹری جنرل مجلس وحدت مسلمین پاکستان علامہ ناصرعباس جعفری نے وحدت سیکریٹریٹ اسلام آباد سے جاری اپنے خصوصی پیغام میں کہا ہے کہ گزشتہ سالوں کی طرح اس سال بھی تباہ کن سیلاب نے قوم کو پھر ایک بڑے امتحان میں مبتلا کر دیا ہے جس کے نتیجے میں ہزاروں لوگ بے گھر ،سینکڑوں افراد جاں بحق اور ہزاروں ایکڑ اراضی کو نقصان پہنچا ہے جیسے جیسے سیلابی ریلہ آگے بڑھ رہا ہے نقصان کے دائرہ کار میں بھی اضافہ ہوتا جا رہا ہے پاکستانی قوم گزشتہ دہائیوں سے قدرتی وانسانی سانحات کا مقابلہ کر رہی ہے ،یہ قوم کہیں معاشرے کے ظلم و جبر پر مبنی استحصالی نظام کی زنجیروں کو توڑنے کے لیے قربانیاں دے رہی ہے اور کہیں سیلاب وزلزلے اس قوم کے صبر وحوصلے کو آزما رہے ہیں۔ قوم کی ترقی اور آزمائشوں کا سفر بحرانوں سے گزر کر ہوتا ہے جسے وہ اپنے عزم وارادے کے ساتھ طے کرتے ہیں لیکن یہ آزمائش باضمیر حکمرانوں اور اچھی لیڈر شپ کی موجودگی میں اچھی فرصتوں اور بہترین مواقعوں میں بدل جاتے ہیں جو قوم کے اندر ایک نئی روح پھونکتے ہیں اور انہیں نئے عزم کے ساتھ ان بحرانوں سے نبردآزما ہونے کا رستہ بتلاتے ہیں لیکن بدقسمتی سے پاکستانی قوم کو جوحکمران ملے ہیں وہ بحرانوں کا مقابلہ کرنے کی صلاحیت نہیں رکھتے بلکہ یہ حکمران بحران ایجاد کرتے ہیں اور پھر اپنی تمام توانائی اور منصوبہ بندی اپنے مفادات کو ہی محفوظ بنانے کے لیے صرف کرتے ہیں ۔نتیجے کے طور پر قوم ان بحرانوں سے گزر کر پسماندگی اور غربت کی دلدل میں اور بھی دھنس جاتی ہے۔



0 201 کے سیلاب کے بعد جس طرح پور ی قوم نے یکجا ہوکر متاثرین سیلاب کی بحالی اور تعمیر نو کے مرحلے تک اپنا کردار بخوبی ادا کیا انشاء اللہ اس بار بھی یہ قوم اس مشکل گھڑی میں اپنے سیلاب سے متاثرین پاکستانیوں کو تنہا نہیں چھوڑے گی ۔میں پاکستان کی سول سوسائٹی،مخیر حضرات،رفاہی اداروں اور میڈیا سے التماس کرتا ہوں کہ وہ سیلاب زدگان کی بحالی کے لیے ایک جسد واحد کی مانند ان کے درد میں شریک ہوں ۔ میں مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے تمام مرکزی ،صوبائی ،ضلعی اور یونٹس کے ذمہ داروں کوخصوصی تاکید کرتا ہوں کہ اس مشکل گھڑی میںآ گے بڑھیں اور متاثرین سیلاب کی بحالی کے لیے اپنا کلیدی کردار ادا کریں اور پاکستان سے باہر بھی عالم اسلام اور دیگر تمام ممالک میں مقیم پاکستانی بھائیوں اور بہنوں کو بھی اس مشکل گھڑی میں سیلاب زدگان کی بھر پور امداد کی اپیل کرتاہوں ۔ انشاء اللہ غریب اور مستضعف عوام کی خدمت کے اس کار خیر میں اللہ ہمارا حامی و ناصر ہو گا ۔

 



نوٹ :تعاون کیلئے تفصیلات درج ذیل ہیں
برائے امداد( ادویات،خوراک،خیمے ،نقدرقوم):ہیڈ آفس خیرالعمل فاؤنڈیشن پاکستان ،اسلام آباد،فون نمبر 051444487
اکاؤنٹ نمبر۔ دبئی اسلامک بینک بلیو ایریا اسلام آباد برانچ A/c: 0171430001
نثار علی/سیدمسرور عالم نقوی/سیدبابرعباس زیدی

وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین بلوچستان کے سییکریٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی نے عراق میں تمام مکاتب فکر کی ہم آہنگی سے قومی حکومت کے قیام کو خوش آیند قرار دیتے ہوئے توقع ظاہر کی ہے کہ عراقی عوام اور سیاسی و مذہبی قیادت اپنے اتحاد اور اخوت کے ذریعے اس مقدس سرزمین کو دہشت گردی سے پاک بنا دے گی۔ جو لوگ عراق کو ٹکڑے کرنا چاہتے ہیں ان کی سازشیں ناکام بنا دیگی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم حیدر العبادی کی کابینہ میں عادل عبدالمہدی، ہوشیار زبیری اور سابق وزرائے اعظم ابراہیم جعفری، نوری المالکی اور ایاد علاوی جیسے کہنہ مشق سیاستدانوں سے عراق کے لئے بہتر مستقبل کی امید ہے۔ دریں اثناء علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ انقلاب اور آزادی مارچ نے شریف برادران کے استعفی سے بڑا ہدف حاصل کرلیا ہے اور وہ اس ملک میں نصف صدی پر محیط ظالمانہ استحصالی نظام کو بےنقاب کرنا ہے۔ اب وہ سب مکروہ چہرے عوام کے سامنے بےنقاب ہو چکے ہیں، جنہوں نے دونوں ہاتھوں سے ملکی دولت کو لوٹا۔ اب نواز شریف اور اراکین اسمبلی کی ٹیکس چوری اور کرپشن کی داستانوں سے ملک کا ہر شہری آگاہ ہو چکا ہے۔ لہذٰا آئندہ انتخابات میں بہت سارے لیڈروں کی ضمانتیں ضبط ہوں گی، اور خاندانی بادشاہتوں میں زلزلہ بپا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ انقلاب مارچ تکفیری سوچ پر کاری ضرب ہے، جہاں اتحاد بین المسلمین کے تحت وحدت اور اخوت کا پیغام دیا جا رہا ہے۔ شیعہ سنی مسلمان متحد ہوکر اسلام دشمن سامراج کا مقابلہ کریں گے اور ملکی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کریں گے۔

وحدت نیوز( کراچی) ٹارگٹ کلنگ کے بڑھتے ہوئے واقعات میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے شہر میں موجود حکمران جماعتوں اور عوامی نمائندگان کے کانوں پر جو نہیں رینگتی کراچی میں مخصوص ڈسٹرکٹ سینٹرل اور ڈسٹرکٹ ویسٹ میں دہشتگردی کے واقعات میں معصوم لوگوں کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا جا رہا ہے قانون نافذ کرنے والے ادارے پولیس اور 20سالوں سے شہر کاعوامی بجٹ کھانے والی رینجرز آخر شہر میں کن ٹارگٹ کلرزکے خلاف آپریشن کر رہی ہے ۔ان خیالات کا اظہار مجلس و حدت مسلمین کراچی کے رہنماء علامہ علی انور نے ٹارگٹ کلنگ کے واقعہ میں شہید ہونے والے ایم ڈبلیو ایم ضلع غربی کے سابق سیکریٹری جنرل کے چچا صابر حسین اور بہنوئی غلام حیدر کے نماز جنازہ کے بعد شرکاء سے خطاب میں کیا نماز جنازہ ایرانی کیمپ اورنگی ٹاؤن میں ادا کی گئی جس میں مجلس وحدت مسلمین کراچی کے رہنماؤں اور کارکنان نے بڑی تعداد نے شرکت کی اور ٹارگٹ کلنگ کے اس واقعہ پر احتجاج کیا ۔

 

علامہ علی انور کا کہنا تھا کہ شہر قائد دہشتگری ٹارگٹ کلنگ میں عالمی رینکنگ میں آرہا ہے ڈاکٹرز ،وکلاء ،پروفیسرز،علماء و اکابرین سمیت شیعہ تاجروں کو مسلسل نشانہ بنایا جا رہا ہے مگر حکمران چین کی نیند سو رہے شہر میں کالعدم جماعتوں کا راج قائم ہوگیا ہے اور افسوس کے ان کالعدم جماعتوں کی سر گرمیاں روز بروز بڑھتی جا رہی ہیں مگر حکومت کی جانب سے ان کالعدم جماعتوں کے رہنماؤں اور شہر میں کھلے ان کے دفاتر کو سکیورٹی دی جاری ہے شہر میں موجود سیاسی جماعتیں اور ان کے منتخب نمائندگان اتنے بے حس ہو چکے ہیں کے وہ اس دہشتگری کی مذمت تو دور اس کا ذکر تک نہیں کر رہے۔شہر میں دہشتگردی کے شکار معصوم لوگو ں اور ان کے اہل خانہ سے دادرسی کرنے والہ بھی کوئی نہیں حکومت اور آپوزیشن جماعتیں اس شہر میں اپنی تنظیموں اور وزیروں پیٹ بھر رہی ہیں اگر شہر میں ٹارگٹ کلنگ کی صورتحال ایسی ہی رہی تو عوام ان حکمرانوں کو چین سے نہیں بیٹھنے دی گی اور ان کے بھی احتساب کے دن اب قریب ہیں قاتلوں کی گرفتاری اور دہشتگردی کے خاتمے چین سے نہیں بیٹھیں گے ۔

 

انہوں نے وفاقی اور صوبائی حکومت سمیت چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کیا کے شہر قائد شیعہ افراد کے کلنگ میں ملوث دہشتگردوں کو فوری گرفتار کیا جائے اور دہشتگردوں کو سر عام پھانسی دی جائے دریں اثنا ء ایرانی کیمپ اورنگی ٹاؤن ٹارگٹ کلنگ کے واقع میں شہید ہونے والے صابر حسین اور غلام حیدر کی تدفین مقامی قبرستان میں کر دی گئی ۔جس میں ایم ڈبلیو ایم رہنماؤں اور کارکنان سمیت شیعہ و سنی عمائدین نے بڑی تعداد میں شر کت کی اور حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی مرکزی کابینہ کا اہم اجلاس وحدت سیکریٹریٹ اسلام آبادمیں علامہ ناصر عباس جعفری کی زیر صدارت منعقد ہوا، جس میں کراچی میں سمیت ملک بھر میں جاری شیعہ ٹارگٹ کلنگ، قومی سیاسی صورتحال ،اسلام آباددھرنااور سیلاب کی تباہ کاریوں پر تفصیلی غور وخوض کیا گیا، علامہ ناصرعباس جعفری نےکراچی میں جاری ٹارگٹ کلنگ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پولیس اور رینجرز کا ٹارگٹڈ آپریشن ناکام ثابت ہوا ہے اب مذید سانحات سے بچنے کے لئے کراچی میں پاک فوج کا وزیر ستان طرز کا آپریشن ناگزیر ہو چکا ہے، انہوں نے  کراچی سمیت ملک بھر میں جاری شیعہ ٹارگٹ کلنگ خصوصاًگذشتہ دنوں شہید ہونے والے علامہ علی اکبر کمیلی کے بہیمانہ قتل کے خلاف 12ستمبر بروز جمعہ ملک بھر میں پرزور یوم احتجاج منانے کا اعلان کیا، انہوں نے تمام مرکزی ، صوبائی اور ضلعی عہدیداروں کو ہدایات جاری کیں کےملک بھر کی جامع مساجد اور پریس کلبوں پر احتجاجی مظاہرے اور ریلیاں کا انعقاد کیا جائے اور پنجاب ، خیبر پی کےاور کشمیر میں آنے والے حالیہ سنگین سیلاب کے پیش نظروحدت یوتھ، وحدت اسکاوٹ اور خیر العمل فاونڈیشن کو ہدایات جاری کیں کہ ملک بھر میں ریلیف کیمپ لگائے جائیں اور سیلا ب زدگان کی ہر ممکن کوششیں بروئے کار لائی جائیں ، انہوں نے مذید کہا کہ اسلام آباد میں جاری انقلاب دھرنے میں امدادی سامان کی فراہمی اور کارکنان کی شرکت جاری رکھی جائے گی جبکہ ایم ڈبلیوایم ڈاکٹر طاہر القادری کو کسی صورت تنہا نہیں چھوڑے گی۔

وحدت نیوز ( کراچی) عوام کے مسائل حکمرانوں کی ترجیحات میں شامل ہی نہیں ، سیاسی جماعتیں وسائل اور وزارتوں کی بندر بانٹ میں دست وگریباں ہیں ، غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ اور بجلی کے بلوں میں اضافے نے عوام کو چین سکون بھی چھین لیا ہے، آئے روز ٹیکسوں میں اضافہ حکمرانوں کی عیاشیوں کا سبب بن رہا ہے، آئین پاکستان کی رو کے مطابق عوام کو حقوق فراہم نہ کرنا حکمرانوں کی خیانت ہے،بجلی کے نرخوں میں اضافہ مہنگائی کے بوجھ تلے دبے عوام پر ظلم ہے، عوام استحصالی نظام سے بغاوت کر رہے ہیں ، ان خیالات مجلس وحدت مسلمین کراچی کے پولٹیکل سیکر ٹری علی حسین نقوی نے وحدت ہاوس انچولی ممیں ڈسٹرکٹ پولٹیکل کونسل کے اراکین سے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر حسن ہاشمی ،میثم عابدی ،رضا حیدر بھی موجود تھے۔

 

علی حسین نقوی کا کہناتھا کہ وفاق اور سندھ میں حکمران جماعتوں نے عوامی حقوق کے استحصال کے سوا کوئی کام انجام نہیں دیا، بے مقصد اور بے مصرف پروجیکٹس شروع کرکے عوام کو بے وقوف بنایا جا تا رہا، جو قوم ایک وقت کی روٹی ، تن پردو گز کپڑے اور سر چھپانے کے لئے چھت سے محروم ہو اسے بسیں، ٹرینیں اور سڑکیں پیٹ بھرنے کے لئے کافی نہیں ، سیلاب کے نتیجے میں لاکھوں لوگ بے گھر ہو رہے ہیں ، لاکھوں ایکڑ زرعی زمین زیر آب آچکی ہے، اگر حکمران اتنے کی عوام کے خیر خواہ ہوتے تو اس سیلابی پانی سے استفادے کیلئے مختلف شہروں اور دیہاتوں میں ڈیم بناتے، لیکن ان کرپٹ مائنڈ سیٹ کے حامل سیاست دانوں کو عوامی مفادات سے زیادہ اپنے بزنس انٹرسٹ زیادہ عزیز ہیں ، بجلی کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں ، بارہ بارہ چودہ چودہ گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کے باوجود ہزاروں روپئے کے بل غریب آدمی کو مذید بوجھ تلے دبانے کے لئے بھیجے جا رہے ہیں ، طرح طرح کے ٹیکس لگا کر عوام کا گلا گھونٹا جا رہا ہے، ہم عوام پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کہ بلاجواز اضافہ شدہ بل جمع نہ کروائے جائیں ، حکمران اگر عوام کے مسائل حل نہیں کر سکتے تو کم از کم ان میں اضافے کا باعث بھی نہ بنیں، سیوریج کا نظام ابتری کا شکار ہے،گلیاں ، چوراہے، اور بازار گٹر کے پانی میں ڈوبے پڑے ہیں ، منتخب نمائندوں کو نظر نہیں آتا ، شہری آبادی میں ترقیاتی کاموں میں تعصب برتا جا رہا ہے، حکام رشوت خوری میں مصروف ہیں ، انہوں نے مذید کہا کہ مجلس وحدت مسلمین عوام کو درپیش معاشی و سماجی مسائل کے حل کے لئے ہر فورم پر آواز بلند کرے گی۔

وحدت نیوز(مظفرآباد) کراچی میں سندھ حکومت کا دہشتگردوں کے خلاف جاری آپریشن ڈوھنگ ہے فراڈ ہے۔علامہ علی اکبر کمیلی کی شہادت ملت اسلامیہ پاکستان کیلئے ناقابل تلافی نقصان ہے۔کراچی میں جاری دہشتگردی کی نئی لہر باعث تشویش ہے۔ پاک فوج کراچی میں بھی ضرب عضب طرز کا آپریشن شروع کرکے دہشتگردوں کا قلعہ قمعہ کرے۔ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین آزادجموں وکشمیر کے سیکرٹری جنرل ،داعی اتحاد بین المسلمین ممتاز عالم دین علامہ سید تصور حسین نقوی الجوادی نے وحدت سیکرٹریٹ مظفرآباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف پاک فوج شمالی وزیرستان میں دہشتگردوں کے خلاف کامیاب آپریشن میں مصروف ہے۔دوسری جانب کراچی سمیت پاکستان کے دیگر شہروں میں موجود دہشتگرد مذید مستحکم و منظم ہو رہے ہیں۔کراچی میں بڑی تعداد میں غیر ملکی دہشتگرد اپنی پناہ گاہوں میں ملکی امن کو تحہ و بالا کرنے کی سازشوں کو عملی شکل دے رہے ہیں۔ بھرپور فوجی آپریشن کراچی اور ملک بھر کے امن کیلئے ناگزیر ہو چکا ہے۔ایک سوال کے جواب میں علامہ جوادی نے کہا کہ القائدہ نے بھی چند روز قبل برصغیر کے لئے نئی شاخ کے قیام کا اعلان کیا ہے جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان بھر میں دہشتگرد کس حد تک منظم ہو چکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ممتاز عالم دین جعفریہ الائنس کے رہنماء علامہ عباس کمیلی کے صاحبزادے علامہ علی اکبر کمیلی کی شہادت ،ملک میں جاری منظم شیعہ نسل کشی کا تسلسل ہے۔چن چن کر قابل ترین شیعہ افراد کا قتل قابل مذمت ہے۔سندھ حکومت اور وفاقی حکومت مذہبی شخصیات کو سیکورٹی فراہم کرے ۔ عوام و خواص کے جان و مال کا تحفظ حکومت کی ذمہ داری ہوا کرتی ہے۔ انہوں نے مسلحہ افواج پاکستان سے درمندانہ اپیل کرتے ہوئے کہا کر ملک بھر اور بالخصوص کراچی میں بڑھتی ہوئی دہشتگردی کو روکنے کیلئے کراچی میں ضرب عضب طرز کا بھرپور فوجی آپریشن جلد از جلد شروع کیا جائے۔ ملک سے دہشتگردوں کا مکمل صفایا ہی پاکستان کی بقاء کی ضمانت ہے۔

وحدت نیوز ( پشاور) مجلس وحدت مسلمین خیبر پختونخوا کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ سید وحید کاظمی نے اکبر کمیلی کی شہادت کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کراچی پاکستانی قوم خصوصا ملت تشیع کے لئے ایک قتل گاہ بن گئی ہے، حکومت نام کی کوئی چیز ہی نہیں رہی ہے، کراچی میں ہمیشہ بے گناہوں کا خون بہایا جاتا ہے، جبکہ نواز شریف، چوہدری نثار اور قائم علی شاہ صرف بیان بازی تک محد ود رہتے ہیں، کبھی عملی قدم نہیں اٹھاتے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر قتل عام اسی طرح جاری رہا تو انتہائی قدم اٹھانے پر ہم بھی مجبور ہونگے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس وقت ملک انارکی کی صورت حال سے گزر رہا ہے۔ مسلم لیگ ن اور پی پی نظام حکومت چلانے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکے ہیں، یوں اقتدار میں رہنے کا انکو اب کوئی حق حاصل نہیں رہا۔ چنانچہ ملک کے بہترین مفاد میں یہی ہے کہ یہ لوگ حکومت چھوڑ کر اب اپنے گھر چلے جائیں کیونکہ عوام پر اب یہ حکمرانی کا حق کھو چکے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ایسے حالات میں کراچی میں جلد از جلد فوجی آپریشن شروع کیا جائے اور اس دوران دہشتگردوں سے کسی طرح کی رعایت نہ کی جائے۔ انہوں نے علامہ اکبر کمیلی کے قاتلوں کو جلد سے جلد گرفتار کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree