The Latest

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کے کارکنان کی رہائی قیادت کی دلچسپی اور وکلاء کی انتھک محنت کا نتیجہ ہے ضانت پر رہائی پانے والے مجلس وحدت مسلمین آزادجموں وکشمیر کے عہدیداران سید عنصرعلی نقوی چیف سکاوٹ،سید تصورعباس موسوی سیکرٹری سیاسیات،سید شاہد علی کاظمی سیکرٹری یوتھ ضلع مظفرآباد ،سید احسن علی نقوی کی متعلقین سمیت قائد وحدت ناصر ملت علامہ راجہ ناصر عباس جعفری سے ملاقات قائد وحدت نے کارکنوں کے حوصلوں اور جرائات کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ہم جس راستے کے راہی ہیں وہ پھولوں کی سیج نہیں بلکہ مشکلات سے بھرا ہوا راستہ ہے لیکن ہمارے پاس وہ عظیم تاریخ ہے جس کی سالار اسیران شام سید ہ زینب ہیں اہل بیت علیھم السلام کا راستہ استقامت شجاعت اور جراء ت وبہادری کا راستہ ہے ہمارے کارکنان کی گرفتاریاں نہ تو ہمارے حوصلوں کو پست کر سکتی ہیں اور نہ ہی ہمیں ہمارے اصولی موقف سے ہمیں پیچھے ہٹا سکتی ہیں ،ہمارے کارکنان پر جھوٹے مقدمات قائم کر کے انہیں پابند سلاسل کر کے تحریک کو نہ تو کمزور کیا جسکتا ہے اور نہ ہی حکومت اپنے مقاصد میں کامیاب ہوگی۔

 

انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین کا ہر کارکن ہر طرح کے حالات کے لئے ہمہ وقت آمادہ ہے ہمارے اتحاد اور تحرک سے دشمن پریشان ہے خاص طور پر حکومت پنجاب شدید بوکھلاہٹ کا شکار ہے کارکنان کے خلاف جھوٹے مقدمات قائم کئے جاتے ہیں دہشتگرد سر عام دندناتے پھر رہے ہیں نہتے کارکنوں اور امن اتحاد اور ملکی استحکام وترقی کی بات کرنے والوں کیخلاف جھوٹی ایف آئی آر اور مقدمات بنائے جارہے ہیں انہوں نے کہا چاروں صوبوں گلگت بلتستان اور کشمیر سمیت حکمرانوں کے خلاف شدید نفرت پائی جا رہی ہے گلی گلی میں گو نوز گو کے نعرے لگ رہے ہیں اور یہ سلسلہ اب ملکی سرحدوں کو عبور کر چکا ہے اور یہ جہان بھی جائیں گے نفرت اور بیزاری کے نعرے ان کا پیچھا کریں گے ،اس موقع پر برادر مہدی عابدی،علامہ عبدالخالق اسدی ،علامہ سید تصور حسین جوادی، علامہ حسن ہمدانی،سید اسد نقوی ،سید فضل عباس ایڈوکیٹ ،مولانا حمید حسین نقوی اور دیگر تنظیمی ذمہ داران بھی موجود تھے۔

وحدت نیوز (کراچی) مجلس وحدت مسلمین صوبہ سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ مختارامامی نے ملیرجعفرطیارمیں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں پانچ لاکھ سے زائد طالبان دہشتگردوں کی موجودگی شہر کراچی اور سندھ کے عوام کے لئے سنگین خطرہ بن چکی ہے لہذٰاشہر کراچی اور سندھ کے عوام کو امن و امان فراہم کرنے کے لئے ضروری ہے کہ حکومت آرٹیکل 245نافذ کرکے کراچی سمیت سندھ بھر میں کالعدم دہشت گرد گروہوں اور ملک دشمن عناصر کے خلاف آپریشن ضرب عضب طرز پر بے رحمانہ فوجی آپریشن کیا جائے جو کہ آخری دہشتگرد کے خاتمہ تک جاری رہے اس موقع پر ان ے ہمراہ آصف صفوی ،عالم کربلائی،حیدر زیدی سمیت ضلع رہنما بھی موجود تھے۔

 

علامہ مختار امامی نے کہا کہ پنجابی طالبان کے بعد ریاستی حساس اداروں کی جانب سے سندھ میں سندھی طالبان کے وجود کے انکشاف نے ثابت کر دیا ہے کہ شاہ عبد الطیف بھٹائی کی سر زمین کو دہشت گردوں سے سنگین خطرات لاحق ہیں لہٰذا سندھ حکومت تمام تر مصلحتوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے سندھی طالبان سمیت تمام ملک دشمن اور سندھ دھرتی کے دشمنوں کے خلاف فی الفور کارروائی عمل میں لائے۔ کراچی سمیت سندھ بھر میں موجود غیر قانونی مدارس اور کالعدم دہشت گردگروہوں کی سرگرمیاں کھلے عام جاری ہیں جس کا اعتراف خود وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ بھی کر چکے ہیں، لہٰذا انتہاپسندی و دہشتگردی کے فروغ میں ملوث تمام غیر قانونی مدارس کی روک تھام کے لئے فی الفور سندھ اسمبلی میں قانون سازی کی جائے، اس کے ساتھ ساتھ اندرون سندھ میں موجود غیر قانونی مدارس میں موجود مقیم غیر ملکی افراد کے خلاف بھی قانون سازی کرتے ہوئے کارروائی عمل میں لائی جائے۔

وحدت نیوز (قم المقدسہ) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل و ترجمان علامہ سید حسن ظفر نقوی ان دونوں ایران کے دورے پر ہیں ، گذشتہ روز انہوں نے وحدت سیکریٹریٹ قم المقدسہ کا دورہ کیا، اس موقع پر ایم ڈبلیوایم کے مرکزی رہنماعلامہ اعجاز بہشتی بھی موجود تھے، ایم ڈبلیوایم قم المقدسہ کے سیکریٹری جنرل علامہ ڈاکٹر غلام محمد فخرالدین نے معزز مہمان کو سیکریٹریٹ آمد پر خوش آمدید کہا، علامہ حسن ظفر نقوی نے سیکریٹریٹ میں موجود مقامی رہنماوں اور کارکنان سے ملاقات کی اور قومی و بین الاقوامی سیاسی صورتحال پر گفتگو کی، آخر میں علامہ حسن ظفر نقوی نے علامہ ڈاکٹرغلام محمد فخرالدین کو اپنی کتاب“ آداب خود آگاہی “تحفے میں پیش کی۔

وحدت نیوز(لاہور) مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے صوبائی رہنماوُں اور ضلع لاہور کے عہدیداران کا مشترکہ اجلاس صوبائی سیکریٹریٹ مسلم ٹاون میں منعقد ہوا ،اجلاس کی صدارت مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل سید اسد عباس نقوی نے کی اجلاس میں حکومت پنجاب کی جانب سے مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی رہنماوں سے سکیورٹی واپس لینے کی شدید مذمت ، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سید اسد عباس نقوی نے کہا موجودہ ملکی صورت حال کو پیش نظر رکھتے ہوئے ہماری شخصیات کی سکیورٹی بڑھانے کے بجائے حکومت پنجاب نے ہمارے رہنماوُں اور صوبائی سیکریٹریٹ کی سکیورٹی واپس لے لی ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے ڈی آئی جی آپریشن کو معاملات کی سنگینی سے بذریعہ خط آگاہ کر دیا ہے اس کے بعد کسی بھی قسم کے نقصان کی ذمہ دار پنجاب حکومت اور انتظامیہ ہوگی ۔

 

اجلاس میں سیلاب زدگان کی بحالی اور امدادی سرگرمیوں کا بھی جائزہ لیا گیا اور مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے شعبہ فلاح وبہبود خیرالعمل فاوُنڈیشن کے سیلاب متاثرین کی بحالی کے کاموں پر اظہار اطمینان کرتے ہوئے کارکنان اور مخیر حضرات سے اپیل کی کہ وہ اس امتحان کی گھڑی میں اپنے پاکستانی بھائیوں کا ساتھ دے اجلاس میں سیلاب ذدگان کے لئے متاثرہ علاقوں میں اجتماعی قربانی کے اہتمام کا بھی فیصلہ کیا گیا اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ قربانی کی کھالیں اس عید پر سیلاب ذدگان کی بحالی کے لئے جمع کرینگے اور پنجاب بھر میں ہر یونٹ سطح پر کیمپس لگائے جائیں گے ۔

وحدت نیوز( اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکرٹری فلاح و بہبودو خیرالعمل فاﺅنڈیشن کے چیئر مین نثار علی فیضی نے کہا کہ پاکستان کی98 فیصد عوام غربت،افلاس کی سرخ لائن سے نیچے زندگی گزار رہے ہیں جبکہ حکمران نان ایشوز کے لیے بیرون ملک دوروں پر کثیر پیسہ لٹا رہے ہیں جس سے انکی بادشا ہانہ طرز حکومت اور ذہنیت پوری دنیا کے سامنے آشکارہو چکی ہے سیلاب میں پہلے ہی غربت نے عوام کی کمر توڑ رکھی اوپر سے حکومت آئے دن مہنگائی میں اضافہ کر کے رہی سہی کسر بھی پوری کر رہی ہے عوام کے مسائل و مشکلات سے ان کو کوئی سروکار نہیں ،پاکستانی پوری دنیا میں بیدار ہورہے ہیں اور وہ ان مفاد پرست حکمرانوں سے جلد چھٹکارا چاہتے ہیں اب وہ وقت دور نہیں جب عوام کے غیض و غضب کا سیلاب ان بادشا ہانہ طرز کے حکمرانوں کو ان کے شاہی محلات سمیت خس و خاشاک کی طرح بہا کر لے جائے گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایک نجی ٹی وی کو انٹر ویو دیتے ہوئے کیا ۔

 

نثار علی فیضی نے کہا کہ پاکستان کے سیاسی منظر نامہ پر ابھرتی ہوئی مذہبی وسیاسی لیڈر شپ عوام کے جذبات کی درست ترجمانی کرتے نظر آ رہے ہیں جسکی جھلک عوامی اجتماعات میں بے حد نمایاں اور واضح ہے پاکستان کے عوام ان تبدیلیوں سے اپنی زندگی میں کم سے کم ان بنیادی سہولیات کو دیکھنا چاہتی ہے جو کسی بھی حکومت کی طرف سے عوام کو دینے کے لیے اولین ذمہ داریوں میں سمجھی جاتی ہیں اگر پاکستان کی ترقی و خوشحالی کے منصوبے سیاسی مفادات اور مصلحتوں سے بالا تر ہو کر تشکیل دیئے جائیں تو پاکستان کی سر زمین انسانی و قدرتی وسائل سے مالا مال ہے یہاں دنیا کے بڑے گلیشئر ز ،بڑے پہاڑی سلسلے،اہم دریا ،زرخیز میدان اور جفاکش محنتی لوگ موجود ہیں جو اچھی حکمرانی ،اچھی لیڈر شپ کی موجودگی میں پاکستان کو ترقی یافتہ مما لک کی فہرست میں لاکھڑا کر سکتے ہیں ۔

 

انہوں نے کہا کہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی عوام کو ایک ایسی ہی صالح،دیانت دار اور محب وطن لیڈر شپ فراہم کرنے کی جدو جہد کر رہی ہے ایم ڈبلیو ایم کا سیاسی ،سماجی اور مذہبی کردار معاشرے کے پسے ہوئے طبقے کی داد رسی اور انہیں اپنا حق دلوانے کے لیے ہے اور اسکے لیے ہم بڑی سے بڑی قربانی دینے کے لیے تیار ہیں مجلس وحدت مسلمین کا فلاحی شعبہ خیرالعمل فاﺅنڈیشن بھی انہی اہداف کو سامنے رکھتے ہوئے معاشر ے میں اپنے حقوق سے محروم اور مستحق افراد کی ہر وقت ہمہ تن خدمت کرنے کے لیے میدان عمل میں موجود ہے چاہے وہ کوئی بھی ناگہانی صورتحال ہو خیرالعمل فاﺅنڈیشن نے ملک کو ان مشکلات سے نکالنے کے لیے اپنا بھر پور کردار ادا کیا۔

وحدت نیوز (کراچی) جعفریہ الائنس پاکستان کے زیراہتمام کراچی اور سندھ میں ہونے والی دہشت گردانہ کاروائیوں اور بڑھتی ہوئی دہشت گردی کے خلاف آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد بعنوان Save Pakistan from Militancyکیا گیا جس کی صدارت جعفریہ الائنس پاکستان کے سربراہ علامہ عباس کمیلی نے کی، جبکہ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکز ی علامہ امین شہیدی، پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر تاج حیدر، متحدہ قومی موومنٹ کے مرکزی رہنما حیدرعباس رضوی، جمعیت علماء پاکستان کے سربراہ شاہ اویس نورانی ، پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما فردوس شمیم،اسلم راجپوت،پاکستان مسلم لیگ نواز کے رہنما نہال ہاشمی، اظہر ہمدانی،امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے رہنما غیور عابدی، جماعت اسلامی پاکستان کے رہنما محمد حسین محنتی، مظفر ہاشمی، پاکستان عوامی مسلم لیگ کے مرکزی رہنما محفوظ یار خان ایڈووکیٹ، عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے جنرل سیکرٹری یونس بونیری، سابق صوبائی وزیر ضیاء عباس،آل پاکستان مسلم لیگ کے رہنما طاہر حسین، سندھ ترقی پسند پارٹی کے رہنما گلزار سومرو، پاکستان عوامی تحریک کے رہنما عصمت اللہ، مسیحی رہنما شیپرڈ انور جاوید سمیت علامہ عقیل انجم قادری، علامہ نثار قلندری، علامہ فرقان حیدر عابدی، جمیل یوسف، سلمان مجتبی، قاسم نقوی ، ڈاکٹر خدیجہ محمود،علامہ باقر زیدی سمیت سول سوسائٹی اور انسانی حقوق کی تنظیموں کے کارکنان نے شرکت کی۔

 

 کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما علامہ امین شہیدی نے کہا کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں پانچ لاکھ سے زائد طالبان دہشتگردوں کی موجودگی شہر کراچی اور سندھ کے عوام کے لئے سنگین خطرہ بن چکی ہے لہذٰاشہر کراچی اور سندھ کے عوام کو امن و امان فراہم کرنے کے لئے ضروری ہے کہ حکومت آرٹیکل 245نافذ کرکے کراچی سمیت سندھ بھر میں کالعدم دہشت گرد گروہوں اور ملک دشمن عناصر کے خلاف آپریشن ضرب عضب طرز پر بے رحمانہ فوجی آپریشن کیا جائے جو کہ آخری دہشتگرد کے خاتمہ تک جاری رہے۔

 


علامہ امین شہیدی نے کہا کہ حکومت عوام کے تحفظ کے لئے ہر قسم کا تعاو ن کرنے کے لئے تیار ہے اور آج کی اس آل پارٹیز کانفرنس سفارشات کے تحت حکومت دہشت گردوں کے خاتمے کے لئے ہر ممکنہ اقدام اٹھانے سے گریز نہیں کرے گی۔علامہ امین شہیدی  نے کہا کہ پنجابی طالبان کے بعد ریاستی حساس اداروں کی جانب سے سندھ میں سندھی طالبان کے وجود کے انکشاف نے ثابت کر دیا ہے کہ شاہ عبد الطیف بھٹائی ؒ کی سر زمین کو دہشت گردوں سے سنگین خطرات لاحق ہیں لہٰذا سندھ حکومت تمام تر مصلحتوں کو بالائے طاق رکھتے ہوئے سندھی طالبان سمیت تمام ملک دشمن اور سندھ دھرتی کے دشمنوں کے خلاف فی الفور کارروائی عمل میں لائے۔ کراچی سمیت سندھ بھر میں موجود غیر قانونی مدارس اور کالعدم دہشت گردگروہوں کی سرگرمیاں کھلے عام جاری ہیں جس کا اعتراف خود وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ بھی کر چکے ہیں، لہٰذا انتہاپسندی و دہشتگردی کے فروغ میں ملوث تمام غیر قانونی مدارس کی روک تھام کے لئے فی الفور سندھ اسمبلی میں قانون سازی کی جائے، اس کے ساتھ ساتھ اندرون سندھ میں موجود غیر قانونی مدارس میں موجود مقیم غیر ملکی افراد کے خلاف بھی قانون سازی کرتے ہوئے کارروائی عمل میں لائی جائے۔

 

علامہ امین شہیدی نے مزید کہا کہ حکومت بین المذاہب اور بین المسالک ہم آہنگی کے لئے حکومتی سطح پر ایک علماء بورڈ تشکیل دے جو عملی طور پر بین المسالک ہم آہنگی قائم کرنے میں اپنا بھرپور کردار ادا کر سکے۔شہر اور پورے صوبے میں موجود مدارس کی سرگرمیوں کی نگرانی کی جائے ۔شہر کراچی میں موجود داعش کی موجودگی حکومت کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے تاہم حکومت اس معاملے میں سرد مہری سے کام نہ لے۔

وحدت نیوز (پشاور) مجلس وحدت مسلمین خیبر پختونخوا کے سیکرٹری جنرل علامہ سبطین حسینی کی پاکستان مسلم لیگ (ق) کے صوبائی نائب صدر سید حامد شاہ سے ملاقات، ملکی صورتحال پر تبادلہ خیال، جعفری ہاوس میں ہونے والی ملاقات میں مختلف ماتمی تنظیموں کے سالاروں سے بھی ملاقات کی۔ اس موقع پر تنظیم کی وسعت، ہمہ گیری اور ہر فرد مومن و مسلمان کی شمولیت پر زور دیا گیا۔ دونوں قائدین نے اتفاق و اتحاد اور ملت کی فلاح کے لئے کام کرنے پر اتفاق کا اظہار کیا۔

وحدت نیوز (گلگت) گلگت بلتستان میں نگران سیٹ اپ اور چیف الیکشن کمشنرکی تعیناتی کے سلسلے میں وفاقی حکومت کی مداخلت برداشت نہیں کی جائیگی۔جعلی مینڈیٹ سے برسراقتدار آنے والی حکومت کو حق نہیں پہنچتا کہ وہ گلگت بلتستان کے معاملات میں مداخلت کرے۔ نگران وزیر اعلیٰ اور اس کی کابینہ کے چناؤ میں دیانت دار،سیاسی وابستگی سے بالاتر اور اہل افراد کا چناؤ کیا جائے۔ انتخابات کو شفاف بنانے کیلئے غیر جانبدار ریٹائرڈ جج یا بیورکریٹ کی تعیناتی عمل میں لائی جائے۔مرکز کی طرح مک مکا کی پالیسی کو جاری رکھ کر انتخابات میں اثر انداز ہونے کی کوشش کی گئی تواس کے سنگین نتائج برآمد ہونگے۔

 

ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ نیئرعباس مصطفوی نے اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن مرکز میں مک مکا کی پالیسی پر گامزن ہیں اور گلگت بلتستان میں بھی باریاں لینے کے خواب دیکھ رہی ہیں جسے شرمندہ تعبیر ہونے نہیں دیا جائیگا۔ہماری جماعت گلگت بلتستان میں شفاف انتخابات کے انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے بھرپور کردار ادا کرے گی اور عوام کے حقیقی مینڈیٹ کو چرانے کی کسی سازش کو کامیاب ہونے نہیں دے گی۔شفاف انتخابات کے راستے میں خلل ڈالنے اور من پسند انتخابی نتائج کے ذریعے اقتدار تک پہنچے کے خواب دیکھنے وا لے موجودہ ملکی صورت حال سے عبرت حاصل کریں۔ گلگت بلتستان کے عوام بیدار ہیں اورکئی دہائیوں سے باریاں لیکر حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والوں سے ماضی کے تمام مظالم کے حسابات چکادینے کو تیار ہیں۔انہوں نے مزید کہا وفاقی حکومت کے دن گنے جاچکے ہیں اورزرداری کی بیساکھیوں پر چلنے والی مسلم لیگ ن کی حکومت زیادہ دیر نہیں چلے گی۔

وحدت نیوز ( گلگت) علی مسجد جوٹیال بم سازش کیس ملوث مجرموں کی عدم گرفتاری پرعوام میں بے چینی پائی جاتی ہے۔ ایک ہفتہ گزرنے کے باوجود کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی اور سیکورٹی ادارو ں کی عدم لچسپی سے ثابت یہ ہورہا ہے کسی وہ دباؤ کا شکار ہیں اور واقعے میں ملوث کرداروں کو محفوظ راستہ دینا چاہتے ہیں۔چار کلومیٹر کے رقبے والے شہر میں درجنوں سیکورٹی ایجنسیاں کام کررہی ہیں اور دہشت پھیلانے والوں کے سراغ لگانے میں ناکامی نے ان اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان چھوڑے ہیں۔

 

ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین گلگت ڈویژن کے سیکرٹری جنرل محمد بلال سمائری نے اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا آج ا نہوں نے اہل تشیع کی مسجد میں بم رکھا ہے تو کل کہیں اور بھی رکھ سکتے ہیں۔سیکورٹی اداروں نے ایسے واقعات پر پردہ ڈالنے کی کوشش کی اورمحض خانہ پرُی کی گرفتاری عمل میں لاکر فائل بند کردی گئی تو اس کے بہت برے اثرات مرتب ہونگے۔ انہوں نے مزید کہا کہ معاملے میں سنجیدگی کا مظاہر ہ کرتے ہوئے دہشت گردی کی روک تھام کیلئے موثر اور جامع حکمت عملی ترتیب دی جائے اور کسی دباؤ میں آئے بغیر دہشت گردوں کا سراغ لگاکر انہیں قانون کے کٹہرے میں کھڑا کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ پولیس اور سیکورٹی اداروں خبر دار کیا کہ اگر انہوں نے ماضی کی روش کو ترک نہ کی اور دہشت گردوں پر ہاتھ نہ ڈالا تو ہم احتجاج پر مجبور ہوجائیں گے۔

وحدت نیوز (اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کی لیگل ایڈ کمیٹی کی کاوشوں سے اسلام آباد سے گرفتار ایم ڈبلیوایم کے تمام کارکنان اورعہدیداران کی ضمانت منظور ہوگئی ہے، انسداد دہشت گردی عدالت اسلام آباد میں پیشی کے موقع پر ایم ڈبلیوایم لیگل ایڈ کمیٹی کے رکن فضل عباس ایڈووکیٹ اور اجمل حسین زیدی ایڈووکیٹ نے فاضل جج کے روبرودرخواست ضمانت پیش کی جسے عدالت نے منظور کرتے ہوئے ایم ڈبلیوایم کے تمام کارکنان کو رہا کرنے کا حکم جاری کردیا، واضح رہے کہ ایم ڈبلیوایم آزاد کشمیر کے رہنما تصور موسوی، ذیشان حیدر، تہور عباس اور دیگر ساتھیوں کو 11ستمبر کی صبح اسلام آباد پولیس نے مرکزی سیکریٹریٹ پر چھاپہ مار کر گرفتار کر لیا تھا، تمام گرفتار کارکنان پر انسداد دہشت گردی ، کار سرکار میں مداخلت اور دیگر دفعات لگا کر بلا جواز حراست میں رکھا گیا، جو کہ سیلاب متاثرین کی بحالی کے آپریشن میں حصہ لینے اسلام آباد آئے تھے۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree