The Latest

وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین بلوچستان کے سیکریٹری جنرل علامہ مقصود علی ڈومکی نے 3ستمبر، شہدائے یوم القدس کی چوتھی برسی کے موقعہ پر کہا ہے کہ شہدائے یوم القدس نے غاصب اسرائیل اور شیطان بزرگ امریکہ کے خلاف صدائے حق بلند کرتے ہوئے قبلہ اول ،بیت المقدس کی آزادی کے لیئے اپنے لہو کا نذرانہ پیش کیا،لہذا اسرائیل نوازدہشت گردوں کی گولیوں اوربم دھماکوں کا نشانہ بن گئے۔ 3 ستمبر کا دن حق اور باطل کی تفریق کا دن ہے جب اسرائیلی ایجنٹ بے نقاب ہوکر قوم کے سامنے آگئے۔ شہداء محفل انسانیت کی شمع ہیں،جو ظلمت اور تاریکی میں نور کی شمع روشن کرتے ہیں۔ شہداء کی یاد کو زندہ رکھنے کی اہمیت شہادت سے کم نہیں ہے۔ہم شہدائے یوم القدس کی عظیم قربانی کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے عہد کرتے ہیں کہ ہم قبلہ اول ،بیت المقدس اور سر زمین انبیاء ؑ فلسطین کی آزادی کی تحریک جاری رکھیں گے۔ آج آزادی فلسطین وقبلہ اول کے سلسلے میں امت مسلمہ جو جدوجہد کر رہی ہے بلوچستان کے غیور فرزندان اسلام کا پاکیزہ لہو اس میں شامل ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ 20کروڑ عوام کی ملکیت ہے۔ کسی وڈیرے، چوہدری ، سرمایہ دار یا جاگیر دار کی ملکیت نہیں،پارلیمنٹ کے سبزہ زار پر معصوم بچوں اور مظلوم خواتین کے بیٹھنے پر اعتراض افسوس ناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ معزز ایوان کے مقر رین سے توقع تھی کہ وہ سنجیدہ اعتراضات کا منطقی جواب دیں گے، مگر کسی نے یہ نہیں بتایا کہ جس ایوان کے ستر فیصد ممبران ٹیکس چور ہوں وہ عوام کی کیا رہنمائی کریں گے۔ عوام یہ پوچھتے ہیں کہ کیا واقعی اسی فیصد اراکین اسمبلی نے اپنے اثاثے ڈکلیئر کرتے ہوئے غلط بیانی کی ہے۔

وحدت نیوز(گلگت) سانحہ اسلام آباد کے خلاف مجلس وحدت مسلمین گلگت ڈویژن، سنی اتحاد کونسل، تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ق) نے مشترکہ طور پر گلگت کے مختلف علاقوں میں احتجاج کیا۔ مجلس وحدت مسلمین نے کپٹین شہید ضمیر عباس چوک پر ٹائیر جلا کر احتجاج کیا اور علامتی دھرنا دیا۔ جنرل سیکرٹری مجلس وحدت مسلمین گلگت بلتستان شیخ نیئر عباس مصطفوی کی قیادت میں کارکنوں نے دنیور چوک پر دھرنا دے کر شاہراہ قراقرم ضلع ہنزہ نگر سکشین کو مکمل طور پر بند کیا۔ تحریک انصاف کی کال پر کارکنوں نے شاہراہ قائداعظم جوٹیال میں ٹائر جلا کر احتجاج کیا۔ ذرائع کے مطابق جوتل، سکندرآباد، غلمت سمت ضلع ہنزہ نگر کے دیگر علاقوں میں بھی اسلام آباد تشدد کے خلاف مظاہرہ کیا۔ اس موقع پر ضلع انتظامیہ نے کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لئے سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے تھے۔ بازار سمیت پبلک مقامات پر پولیس کی بھاری نفری تعینات کئے گئے تھے۔

وحدت نیوز(اسکردو) مجلس وحدت مسلمین پاکستان بلتستان ڈویژن کے سیکرٹری جنرل اور سیکرٹری جنرل سنی اتحاد کونسل کی مجلس وحدت سیکرٹریٹ میں اہم ملاقات ہوئی۔ ملاقات میں ایم ڈبلیوایم بلتستان کے سیکرٹری جنرل علامہ آغا علی رضوی اور سیکرٹری جنرل سنی اتحاد کونسل ضلع استور ظفراللہ خان نے ملکی حالات پر تبادلہ خیال کیا۔ اس اہم ملاقات میں مطالبہ کیا گیا کہ وزیراعظم پاکستان تمام مسائل کے ذمہ دار ہیں، وہ  فوری طور پر استعفٰی دیں۔ انہیں مزید کوئی حق نہیں پہنچتا کہ وزارت کے عہدے پر براجمان رہیں۔ ملاقات میں پنجاب پولیس کی جانب سے صحافیوں پر کیے گئے بہیمانہ مظالم کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی اور کہا گیا کہ میڈیا سے منسلک افراد پر جو مظالم نواز کی حکومت نے ڈھائے ہیں وہ شاید ہی کسی آمر کے دور میں بھی ہوا ہو۔ اس سلسلے میں میڈیا صحافی حقیقت و صداقت کی خاطر اپنی خدمات سر انجام دے رہے ہیں جو کہ نہایت ہی مستحسن عمل ہے، انہیں حق بات پھیلانے کی سزا دی جا رہی ہے۔

 

ملاقات میں دونوں رہنماوں نے مظاہرین کے مطالبات پر توجہ نہ دینا اور انہیں یکسر نظر انداز کر کے طاقت کا استعمال کرنا افسوسناک قرار دیا اور واضح کیا کہ گذشتہ کئی روز سے اسلام آباد غزہ کا منظر پیش کر رہا ہے لیکن نواز حکومت اس انتظار میں ہے مظاہرین کو طاقت کے ذریعے زخمی کریں انہیں تھکا دیں اور اپنے اقتدار کو دوام دیں لیکن ایسا نہیں ہو سکتا۔ مظاہرین استقامت کی مثال بن چکے ہیں۔ دونوں رہنماوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ اگر ضرورت پڑتی ہے تو گلگت بلتستان سے بھی قافلہ لانگ مارچ کی صورت میں اسلام آباد کی طرف لے جایا جائے گا۔ انہوں نے تمام ریاستی اداروں کو واضح کیا کہ نواز حکومت سے اتحاد مسلمین ہضم نہیں ہو رہی ہے جبکہ پاکستان میں شیعہ سنی اتحاد پاکستان کی سلامتی اور بقاء کا ضامن ہے اس اتحاد کو سبوتاژ کرنا گویا ریاست پر حملہ کرنے کے مترادف ہے۔ اس ملک کے تمام بیٹے چاہے جس فرقے سے ہوں ملکر وطن کی دفاع اور سلامتی کے لیے اپنا کردار کریں گے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) پنجاب میں بارشوں سے ہونے والے نقصانات اور قیمتی انسانی جانوں کی ضیاع پر دلی ہمدردی اور اظہار افسوس کرتے ہوئے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ راجہ ناصرعباس جعفری کا کہنا تھا کہ پنجاب کے حکمران عوامی فلاحی کاموں میں مکمل ناکام ہو چکے ہیں بارشوں سے قبل نقصانات سے بچنے کیلئے انتظامات کا نہ کرنا اس بات کی دلیل ہے کہ انہیں عوامی خدمت اور صوبے کی مفادات سے کوئی سروکار نہیں یہ صرف اپنی بادشاہت بچاوُ جنگ میں مصروف ہیں ،ان خیالات اظہارعلامہ راجہ ناصرعباس جعفری نےمرکزی سیکریٹریٹ میں راولپنڈی اسلام آباد کے تنظیمی عہدیداران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے  مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے فلاحی شعبہ خیرالعمل فاوُنڈیشن کو ہدایات جاری کی کہ وہ اس موقع اپنے دکھی پاکستانی بھائیوں کی ہر ممکن مدد کے لئے متاثرہ علاقوں کا دورہ کریں انہوں نے فلاحی اداروں اور مخیر حضرات کو بھی اپیل کیا کہ وہ سیلاب متاثریں جو پنجاب حکومت اور انتظامیہ کی بد انتظامی کا شکار ہے کی مدد کے لئے بھر پور کوشش کریں تاکہ مشکل کی اس گھڑی میں متاثرین کی دکھ درد بانٹ سکیں، جبکہ ساتھ ہی شاہرااہ دستور پر موجود دھرنے کی شرکاء کی طبی ، قانونی اور اشیاء خوردنوش کی فراہمی کے حوالے سے بھی خصوصی ہدایات جاری کیں ۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) حکمران بحران کے حل میں سنجیدہ نہیں پارلیمنٹ کا جوائنٹ سیشن اجلاس کرپٹ نظام کو بچانے کے لئے اسٹیٹسکو کے حامیوں کا ایک ناکام حربہ ہے مقدس ایوان پر دھاندلی سے قابض لوگ پاکستان میں تبدیلی ،اصلاحات اور اپنے حق کے لئے سڑکوں پر موجود عوام کی توہین کر رہے ہیں، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری سیاسیات اور حکومت کے ساتھ مذاکراتی ٹیم کے ممبر سید ناصرشیرازی نے مرکزی رہنماوُں کے اجلاس سے خطاب میں کیا انہوں نے کہا کہ اس وقت کرپٹ مافیا متحد ہو کر عوامی جد وجہد کیخلاف غلیظ پروپیگنڈوں میں مصروف ہیں اور پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار عوامی بیداری سے یہ مافیا خائف ہے کیونکہ عوام اب ان لٹیروں کی بساط لپیٹنے کا عزم کر چکی ہے انہوں نے کہا کہ دھرنے کے شرکاء پر عزم ہے اور ہر قسم کے حالات کا سامنا کرنے کو تیار ہے ۔

 

سید ناصرشیرازی کا کہنا تھا کہ حکمران اپنی ناکامی اور کرپشن کو چھپانے کے نت نئے حربے استعمال کر رہے ہیں عوام ان کے چالوں سے بخوبی واقف ہے سپریم کورٹ اور اسمبلی پر حملہ کرنے والے آج کس منہ سے پرامن عوام پر آوازیں کس رہے ہیں ؟ہم اس ملک کے پر امن اور محب وطن شہری ہے اور ہمیں پاکستان کی سالمیت اور استحکام کا  درد  ان لٹیروں سے زیادہ ہے ہمارے کارکنان نے اپنی جانوں کا نذرانہ دے کر بھی امن اور صبر کا دامن ہاتھ سے نہیں چھوڑا حکمران ہوش کے ناخن لیں اور عوامی مطالبات پر قد غن لگانے کے بجائے اس کے سامنے سر تسلیم خم کریں ۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) انقلاب دھرنے میں شریک اتحادی جماعتوں کے رہنماوں نے سراج الحق کی سربراہی میں تشکیل کردہ اپوزیشن جرگےکے ہمراہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی سے سینیٹر رحمٰن ملک کی رہائش گاہ پرملاقات کی،اس ملاقات میں مجلس وحدت مسلمین کے مرکزی سیکریٹری سیاسیات سید ناصرشیرازی سمیت  پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی رہنما ڈاکٹررحیق عباسی ،خرم نواز گنڈہ پوراور سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین  صاحبزادہ حامد رضانےاتحادی جماعتوں ،  پیپلز پارٹی کے سینیٹررحمان ملک ،امیر جماعت اسلامی سراج الحق ، جماعت اسلامی کے مرکزی رہنما لیاقت بلوچ اور میاں اسلم نے اپوزیشن جرگے جبکہ مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماسینیٹر احسن اقبال اور جنرل (ر)عبد القادر بلوچ نے حکومت کی نمائندگی کی ، اتحادی جماعتوں نے حکومتی مذاکراتی کمیٹی کو اپنے مطالبات پیش کیئے جس پر تفصیلی بات چیت کی گئی، زرائع کے مطابق اتحادی جماعتوں اور حکومتی کمیٹی کے درمیان اپوزیشن جرگے کی ایماء پر ہونے والی اس ملاقات میں بھی فریقین کسی نتیجے پر نہیں پہنچ سکے اور یوں مذاکرات بے نتیجہ اختتام پذیر ہوئے۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) پارلیمنٹ کا جوائنٹ سیشن معاملات کو سلجھانے کے بجائے جلتی پر تیل کا کام کررہاہے سیاسی جماعتیں عوام سے عوامی حقوق سے زیادہ اپنے کرپشن اور کرپٹ نظام کو بچانے کی کوششوں میں ہیں پاکستان کی 67 سالہ تاریخ میں پہلی دفعہ عوام اپنے حق اور فرسودہ نظام کی اصلاح کے لئے میدان میں ہیں آج اگر عوامی خواہشات پر سٹیٹسکو کو ترجیح دی گئی تویہ سیاست دانوں کی تاریخی غلطی ہوگی، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سید مہدی عابدی نے مرکزی کابینہ کے اجلاس کے بعد بریفنگ دیتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ آج مک مکا کی سیاست کے پیروکار عوامی رائے کو دبانے کیلئے متحد ہیں اور دوسری طرف پاکستانی عوام اپنے حقوق کیلئے سڑکوں پر  ہے اور عوام اس فرسودہ نظام سے آزادی اور حقیقی جمہوریت کیلئے سڑکوں پر سراپا احتجاج ہے۔

 

انہوں نے کہا آج پر امن مظاہرین پر ریاستی تشدد اور اس کے نتیجے میں انسانی جانوں ضیاع اور سینکڑوں زخمیوں کی دادرسی کے بجا ئے عوام کے زخموں پر نمک چھڑکا جا رہا ہے موجودہ حکمرانوں نے بدترین آمریت کے مظالم کو بھی پیچھے چھوڑدیا ہے ہر باشعور انسان آج اس ظلم و بربریت کی مذمت کررہے ہیں سید مہدی عابدی نے کہا کہ پارلیمنٹ میں دہشت گردوں کے سرپرست آج ملک میں خانہ جنگی اور افرا تفری چاہتا ہے جو ان کا پاکستان کیخلاف اُن کا ذاتی ایجنڈا ہے جسے کوئی بھی محب وطن پاکستانی برداشت نہیں کرینگے ہزاروں پاکستانیوں اور افواج کے قاتلوں سے مذاکرات کا راگ آلاپنے والے آج پارلیمنٹ کے فلور پر پاکستانی عوام کیخلاف طاقت کے استعمال کا مشورہ دے رہے ہیں وقت کیساتھ یہ ملک دشمن گروہ بے نقاب ہوتا جارہا ہے اور انشااللہ ہم ان ملک دشمنوں کی ناپاک عزائم کو کامیاب نہیں ہونے دینگے۔

وحدت نیوز(کوئٹہ) مجلس وحدت مسلمین بلوچستان کے سربراہ علامہ مقصود علی ڈومکی نے کہا ہے کہ اراکین پارلیمنٹ اپنے اختیار اور اقتدار کی بجائے مظلوم عوام کا سوچیں۔ کاش اراکین پارلیمنٹ مظلوم عوام کے حقوق کیلئے اس طرح پریشان ہوتے تو آج 10 کروڑ عوام غربت کی لکیر سے نیچے زندگی نہ گزار رہے ہوتے۔ انقلاب مارچ پر الزامات کی بوچھاڑ کرنے والے حکمرانوں نے یہ نہیں بتایا کہ عوامی حقوق سے متعلق آئین کی 38 شقیں کیوں 41 سال سے معطل اور معلق ہیں۔ وہ یہ بھی بتائیں کہ جس ملک میں عوام دو وقت کی روٹی نہ ملنے کے سبب خودکشی کر رہے ہیں، وہاں ان کے منتخب نمائندے شاہانہ زندگی کیوں گذار رہے ہیں۔ جس ملک کے شہری غربت کے سبب گردے بیچ رہے ہوں، وہاں ان کے منتخب نمائندے محلات میں رہتے ہوں اور کروڑوں، اربوں روپے کا کاروبار کرتے ہوں۔ الزامات لگا کر سنجیدہ سوالوں سے فرار ہی حکمرانوں کا المیہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر داخلہ کی نظر میں ماڈل ٹاؤن میں نہتے شہریوں اور خواتین پر گولیاں چلانے والے قانون کے رکھوالے، جبکہ پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے ظلم کے خلاف پرامن صدائے احتجاج بلند کرنے والے بچے اور خواتین باغی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام اب باشعور ہو چکے ہیں۔ لہذٰا انقلاب اور آزادی کی تحریک کو طاقت اور تشدد سے نہیں دبایا جا سکتا۔ دلیل اور منطق سے عاری حکمرانوں کے پاس انقلاب مارچ کے 10 نکاتی اصلاحی ایجنڈے کا کوئی منطقی جواب نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسئلے کا واحد حل فریقین کے درمیان بامقصد مذاکرات ہیں۔ الزام بازی اور طاقت و تشدد کا استعمال مسئلے کو مزید گھمبیر بنا دے گا۔ حکمران طبقے کو بالآخر مظلوم عوام کے حقوق تسلیم کرنا ہوں گے۔

وحدت نیوز(مظفر آباد) اسلام آباد میں جاری مشترکہ اجلاس ، جمہوریت کے نام نہاد ٹھیکیداروں کی بلند و بانگ تقریریں، ہم سوال کرتے ہیں کہ کیا انہیں ایوان کے باہر بیٹھے غریب عوام نظر نہیں آتے، انہیں اپنے پروٹو کول میں تو خلل تو نظر آتا ہے لیکن پولیس گردی نظر نہیں آتی، انہیں اسلام آباد میں ریڈزون کی فکر تو لاحق ہے مگر ریڈزون میں آنے والوں پر انتہا کا ظلم نظر نہیں ، جمہوریت جمہوریت کا راگ الاپنے والے بتائیں کیا یہی جمہوریت ہے؟ یہ جمہوریت نہیں بلکہ نواز شریف کی خاندانی بادشاہت کو بچانے کے لیئے کرپٹ و شاہ سے زیادہ شاہ کے وفاداروں کا ایکا ہے، ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین آزاد جموں وکشمیر کے سیکرٹری روابط مولانا سید حمید حسین نقوی نے وحدت سیکرٹریٹ مظفرآباد سے جاری ایک بیان میں کیا،

 

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ نون نے نہتے اور پرامن مظاہرین کا خون بہا کر ثابت کیا کہ ہم مسلم لیگ نون سے نہیں بلکہ ’’مسلم لیگ خون‘‘ سے تعلق رکھتے ہیں، پارلمنٹ میں جمہوریت و آئین کی باتیں کرنے والے خود بھی کہتے ہیں کہ ملک میں کرپشن ، مہنگائی اور دہشتگردی ہے، لیکن پھر بھی ہم ان کے ساتھ کھڑے ہیں ، اس مطلب یہ ہوا کہ وہ بھی کرپشن کی بہتی گنگا میں ہاتھ دھو رہے ہیں، انہیں بھی ڈر ہے کہ جو ہم نے آپس میں باریاں لگا رکھیں ہیں وہ ضائع ہو جائیں گی، نواز شریف چلے گئے تو ہمارا کیا ہو گا، چاہیے تو یہ تھا کہ وہ مظاہرین کے مطالبات کو دیکھتے ، ان کے سوالات کا جواب دیتے ، پارلیمنٹ میں کھڑا ہر رکن نواز شریف کو اپنی وفاداری دکھا رہا تھا، انہیں سڑکوں پر رلتی عوام تو نظر نہ آئی پارلیمنٹ کے باہرلگے خیمے نظر آ گئے۔

مولانا حمید نقوی نے کہا کہ پارلیمنٹ اگر عوامی ہے تو عوام کے باہر بیٹھنے سے کسی کو کیا تکلیف ہے، ہمارے حکمران جو ان عمارتوں کو مقدس بنا کر عام آدمی کو قریب بھی نہ آنے دیتے تھے قدرت کا کرشمہ دیکھیں آج وہ عام آدمی سے ہی ڈر کر ادھر ادھر کی باتیں کر رہے ہیں، وزیراعظم ہاؤس ، پاک سیکرٹریٹ او رایوان جو کہ قومی علامت کے طور پر جانے جاتے ہیں تو قوم کو ان سے دور کیوں رکھا جاتا ہے؟ قوم کو ان عمارتوں کے باہر آ کر اپنے مطالبات بھی پیش کرنے کا حق بھی نہیں دیا جاتا، جمہوریت و آئین کی بالادستی والے بتائیں کہاں اور کس جمہوریت میں خواتین و بچوں کو زہریلی گیسوں سے نشانہ بنایا جاتا ہے؟

 

انہوں نے کہا کہ فضل الرحمن اور انکے ہمنوا اس لیئے نہیں بول رہے کہ انہیں جمہوریت کی فکر ہے بلکہ اس لیئے بول رہے ہیں کہ انہیں اپنے مفادات ڈوبتے نظر آرہے ہیں ، انہیں عوام نہیں اپنی منسڑیاں و کرسیاں عزیز ہیں ، مولانا کا ہر پارٹی کی حکومت کے ساتھ مزے لینا اس بات کی واضح دلیل ہے کہ ان کو کرسی اقتدار سے محبت ہے عوام کا خیال نہیں،انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے جانے کے سوا اب کوئی چارا نہیں، صرف اسلام آباد میں دھرنے نہیں بلکہ کراچی سے لیکر کشمیر تک عوام سڑکو ں پر ہے، اور اگر مذید سختیاں کیں گئیں تو حالات کی ذمہ حکومت ہو گی، حالات ٹھیک نہیں بلکہ بدتر ہو جائیں گے، حکمرانوں نے احتجاج کرنے والی جماعتوں کے کارکنان و عہدیداران کو پابند سلاسل کر کے یہ سمجھ لیا کہ ہم محفوظ ہو جائیں گے تو ہم یہ بتا دینا چاہتے ہیں کہ اب یہ مسئلہ کسی پارٹی کا نہیں بلکہ قومی مسئلہ بن چکا جسے جلد از جلد حل کرنا ہو گا۔

وحدت نیوز(اسلام آباد) مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سربراہ علامہ ناصرعباس جعفری کی زیر صدارت کور کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال اور پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اسلام آباد میں ہونے والے کورکمیٹی کے اجلاس میں علامہ احمد اقبال رضوی، علامہ شفقت حسین شیرازی، مرکزی سیکرٹری سیاسیات ناصر عباس شیرازی، نثار فیضی،علامہ اعجاز بہشتی ، فضل نقوی مرکزی سیکرٹری اطلاعات محمد مہدی سمیت دیگر ارکان نے شرکت کی۔ اجلا س کے بعد میڈیا کو جاری کیے گئے اعلامیئے میں کہا گیاکہ مجلس وحدت مسلمین پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کو غیرقانونی ، غیرآئینی اور بدترین دھاندلی کے نتیجے میں اقتدار میں آنے والی حکومت کو بچانے کی ایک کوشش سمجھتی ہے۔اعلامیے میں پر امن اور جمہوری حقوق کی خاطر سڑکوں پر آنے والے مظلوم عوام کودہشتگرد اور بغاوت سے تعبیر کرنے کی شدید مذمت کی گئی ہے اور قرار دیا گیا ہے کہ دہشتگردوں کی حامی حکومت ملک میں افراتفری چاہتی ہے اور جمہوری حقوق کی نفی کرکے ثابت کرتی ہے کہ یہ جماعت اپنے روحانی باپ ضیاء الحق کی باقیات کو باقی رکھنا چاہتی ہے یہی وجہ ہے کہ پرامن عوام پر جبر اور تشدد کے ذریعے انہیں دبانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اجلاس میں کہا گیا کہ گذشتہ دو دن میں انقلاب اور آزادی مارچ کے شرکاء پر ہونے والی شیلنگ، ربٹر اور بلٹس کا استعمال ثابت کرتا ہے کہ نواز شریف جمہوریت پر یقین نہیں رکھتے۔ تین افراد کی شہادت اور چھ سو سے زائد افراد کا زخمی ہونا ثابت کرتا ہے کہ ملک میں ایک آمر اور بادشاہ کی حکومت ہے ۔اجلا س میں فیصلہ کیا گیا کہ مجلس وحدت مسلمین عوامی تحریک ساتھ کھڑی ہے اور کھڑی رہے گی۔ اجلاس میں لاہور ،جھنگ ،اسلام آباد سمیت دیگر شہروں میں کارکنان کی بلا جواز گرفتاریوں کی مذمت کرتے ہوئے اسے سیاسی انقامی کاروائی قرار دیا گیا اور مطالبہ کیا گیا کہ حکومت فی الفور کارکنوں کو رہا کرے ۔

مجلس وحدت مسلمین پاکستان

مجلس وحدت مسلمین پاکستان ایک سیاسی و مذہبی جماعت ہے جسکا اولین مقصد دین کا احیاء اور مملکت خدادادِ پاکستان کی سالمیت اور استحکام کے لیے عملی کوشش کرنا ہے، اسلامی حکومت کے قیام کے لیے عملی جدوجہد، مختلف ادیان، مذاہب و مسالک کے مابین روابط اور ہم آہنگی کا فروغ، تعلیمات ِقرآن اور محمد وآل محمدعلیہم السلام کی روشنی میں امام حسین علیہ السلام کے ذکر و افکارکا فروغ اوراس کاتحفظ اورامر با لمعروف اور نہی عن المنکرکا احیاء ہمارا نصب العین ہے 


MWM Pakistan Flag

We use cookies to improve our website. Cookies used for the essential operation of this site have already been set. For more information visit our Cookie policy. I accept cookies from this site. Agree